پنجاب اسمبلی کااجلاس 2گھنٹے38منٹ کی تاخیر سے شروع ہوگیا جس کی صدارت ڈپٹی سپیکر ظہیر چنڑ نے کی،

0
35

پاکستان ٹوڈے:اجلاس کے آغاز میں سیکرٹری اسمبلی نے عبداللہ وڑائچ، رانا منور حسین، علی حیدر گیلانی اور غلام رضا اعلان کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق ڈپٹی سپیکر ظہیر چنڑ نے نومنتخب ایم پی اے اعجاز عالم آکسٹن سے حلف لے لیا۔ ضمنی انتخاب میں مبینہ دھاندلی کے خلاف معاملہ ایوان کے اندر بھی اٹھائیں گے باہر بھی احتجاج کریں گے ، اپوزیشن کا شور شرابا ، حکومت اور اپوزیشن ارکان کی ایک دوسرے پر الزام تراشی، شور شرابے میں اپوزیشن نے کورم کی نشاندہی کردی اپوزیشن ارکان ایوان سے باہر چلے گئے،

ایوان کی کارروائی نہیں چلنے دیں گے، حکومتی رکن کی مداخلت پر رانا آفتاب سیخ پا ہوگئے، افسوس کی بات ہے کہ پونے تین گھنٹے بعد اجلاس شروع کیا۔ تقریبا آپکا کام تمام ہونے والا ہے قبلہ درست کرلیں آپکے پاس پارلیمانی سیکرٹریز نہیں سٹینڈنگ کمیٹی نہیں بنی ہے آپ نے تو پولیس اسٹیٹ بنادیا ہے۔

جیلیں سب نے دیکھی ہیں خیراتی سیٹوں والے نہ بولیں، اپنا ٹی اے ڈی اے لیں اور موج کریں، اپوزیشن نے ضمنی انتخاب کا معاملہ ایوان میں اٹھا دیا۔

اپوزیشن لیڈر احمد خان بھچر خطاب ایوان:

پولیس کی غنڈہ گردی اور دھاندلی سے لوگوں کا اعتماد اٹھ گیا ہے ، تین دن پہلے پریزائیڈنگ آفیسر کو فارم 45پر دستخط کروائے گئے، ہمارے پولنگ ایجنٹ اٹھاکر فارم پر مہریں لگا کر واپس کر دئیے۔

ہمیں قصور کی سیٹ پچیس ہزار سے ہروایا گیا بھرپور اس کی مذمت کرتے ہیں، کون سے دہشت گرد ہیں جو پولنگ اسٹیشن جانے تھے جو انٹر نیٹ بند کر دئیے، بارہ حلقوں میں بائیس ہزار پولیس اہلکار تعینات کئے اتنی پولیس گردی،

وزیر پارلیمانی امور میاں مجتبیٰ شجاع الرحمن خطاب ایوان:

پنجاب میں جو الیکشن ہوا وہ صاف شفاف ہوئے، ووٹر نہ نکالا تو ہمارا کیا قصور ہے اپنا ووٹر ہی نہ نکال سکے، جب پی ٹی آئی کا ووٹر نہ نکلا کیونکہ وہ اتحاد کونسل کو ووٹ دینے کےلئے تیار نہیں اب الیکشن پر قدغن لگا رہے ہیں، بار بار دھاندلی کی بات کررہے ہیں پانچ الیکشن پرامن رہے کیمپ خالی تو کیا تین بجے اپنا کیمپ لپیٹ کر گھر چلے گئے۔

غنڈہ گردی کی مثال نارووال میں پیش گئی کارکن محمد یوسف کو سر پر ڈنڈے مار کر شہید کردیا گیا، ظفر وال نے ہمارے لیگی کارکن کو قتل کیا تو وہاں سے ن لیگ بھاری اکثریت سے جیتی۔

الیکشن ووٹوں سے جیتے جاتے ہی اب ان کے دور میں پریزائیڈنگ آفیسر تو دھند میں گم ہوجاتےتھے تو آخر کار وہاں سے شیر ہی جیتتا تھا، جب ان کا طوطی بولتا تھا نیازی فرعون بناہوا تھا تب بھی الیکشن جیت کر دکھائے، صاف شفاف ماحول بنا تھا پورا موقع دیا الیکشن لڑیں آئیں مقابلہ کریں جیت سکتے توجیت کر دکھائیں، نگران حکومت کی طرح ان کو انتخابی مہم سے نہیں روکا، فرحت عباس

خطاب ایوان :

یہ کس طرح الیکشن جیتے قصور کیا ہم پر مقدمات نہیں بنائے، خود اعتراف کر لیا نگران حکومت نے ضمنی الیکشن مہم نہ چلانے دی، ثبوت مانگتے ہیں تو ہم ثبوت دیتے ہیں، اپوزیشن نے کورم کی نشاندہی کر دی

حکومت کورم پورا کرنے میں ناکام ہوگئی ڈپٹی سپیکر نے پانچ منٹ تک گھنٹیاں بجانے کااعلان کردیا۔

Leave a reply