پردھان پاکستان سکھ گورودوارہ پربندھک کمیٹی/ صوبائی وزیر اقلیتی امور سردار رمیش سنگھ اروڑہ کی اہم پریس کانفرنس

0
28

سکھ گوردوارہ پر بںندھک کمیٹی کے دس ممبران بھی موجود، ممبران میں گو بندھ سکھ کیانی ، سرجیت سنگھ ، دیا سنگھ، پریم سنگھ، گلبیر سنگھ شامل

پریس کانفرنس کا انعقاد متروکہ وقف املاک بورڈ کے کمیٹی روم میں کیا گیا، رمیش سنگھ اروڑہ کی گوردوارہ پربندھک کمیٹی کے ممبران کے ہمراہ میر علی چیک پوسٹ پر حملے کی پرزور مذمت

اسطرح کی بزدلانہ کارروائیوں سے ہمارے حوصلے پست نہیں ہو سکتے ۔  رمیش سنگھ اروڑہ کا سکھ یاتریوں کو بہتر سہولیات کی فراہمی کا عزم ماہ اپریل میں ” بیساکھی میلہ اور گردواروں کے امور بارے میڈیا کو بریفنگ اسی سال تین گوردواروں کو فعال کرائیں گے ۔

2018 میں سکھ میرج ایک پاس کرایا تھا ۔ رمیش سنگھ بہت جلد صوبائی کابینہ کی منظوری کے بعد لاگو کروائیں گے۔  پاکستان گوردوارہ پربندھک کمیٹی نوٹیفائ ہو چکی ہے ۔ رمیش سنگھ دس رکنی کمیٹی اپنے تمام تر امور کی جوابدہ ہو گی۔ رمیش سنگھ گوردواروں کے معاملات کو بخوبی چلا نے کے لئے کمیٹی کا سیکرٹریٹ بنانے جا رہے ہیں ۔ رمیش سنگھ

گوردواروں کی زمینوں پر قبضے ختم کرائیں گے۔ رمیش سنگھ بھارتی سکھ یاتریوں کے خصوصی ٹرینیں چلاٸی جاٸیں گی۔ رمیش سنگھ اروڑہ

بیساکھی تہوار کے لٸے بہترین انتظامات کیٸے جاٸیں گے۔ سکھ یاتریوں کی رہائش کے لیے گوردواروں میں جگہ بنائ جائے گی۔ پاکستان اور بھارت کے مابین طے شدہ پروٹوکول کے تحت ویزے جاری کئیے جائیں گے۔ حکومت پاکستان نے بیساکھی میلہ تقریبات کے انعقاد کے لئے شیڈول کی منظوری دے دی ہے۔

یاتری 13 اپریل کو واہگہ چیک پوسٹ کے راستے پاکستان پہنچیں گے۔  یاتریوں کو پاکستان میں قیام، طعام، میڈیکل کی سہولیات مفت فراہم کی جائیں گی۔  سیکورٹی کے فول پروف انتظامات یقینی بنائے جا رہے ہیں۔ رمیش سنگھ وزیر اعلی پنجاب مریم نواز نے یاتریوں کے لیے بہترین انتظامات کے احکامات دے رکھے ہیں۔

خصوصی ٹرین سے سکھ یاتریوں کی گوردواروں کی یاترا آسان ہو جاٸے گی۔  بھارتی سکھ یاتریوں کا لاہور میں قیام بڑھا کر دو روز کر رہے ہیں۔ مقامی سکھ یاتریوں کے لٸے کرتار پور میں پانچ ڈالر فیس ختم کر رہے ہیں۔

دس رکنی سکھ انٹرنیشنل ایڈواٸزری کونسل بنا رہے ہیں۔ ایڈواٸزری کونسل کی سفارشات پر عمل درآمد کیا جاٸے گا۔ پاکستان سکھ گوردوارہ پربندھک کمیٹی کا لاہور میں مرکزی دفتر بناٸیں گے۔

پہلی مرتبہ کوئ خاتون کمیٹی کی جنرل سیکرٹری بنی ہے۔ چاروں صوباٸی دارالحکومتوں میں کمیٹی کے سب آفس بناٸیں گے۔  سکھوں کی زمینوں پر قبضے ختم کرواٸیں گے۔  بیساکھی تہوار سے سکھ میرج ایکٹ کو لاگو کر نے کے لئے کوشاں ہیں ۔

اپنی وزارت کا پانچ سالہ روڈ میپ بنا رہے ہیں۔ ملک میں مذہبی سیاحت کو فروغ دیں گے۔ پہلی بار سکھ کمیونٹی کو صوبائی کابینہ میں شامل کر کے دنیا بھر میں مثبت پیغام دیا گیا ہے۔

تمام وفاقی،صوبائی اور ضلعی ادارے ایک پیج پر ہیں۔  نانک شاہی کیلنڈر کا باقاعدہ آغاز کردیا گیا ہے ۔  مہمانوں کی سیوا کرنا ہمار فرض ہے ، اور ہم اپنا فرض بخونی سر انجام دیں گے۔

Leave a reply