لاہور ہائی کورٹ : پنجاب کے وکلاء نے ہڑتال کی کال مسترد کرکے ملکی تاریخ میں سنہرے باب کا اضافہ کیا

0
25

پاکستان ٹوڈے: لاہورہائی کورٹ سمیت پنجاب بھرکی ضلعی عدلیہ میں عدالتی کارروائی معمول کے مطابق رہی، لاہور ہائی کورٹ میں 662مقدمات کے فیصلے، ضلعی عدلیہ میں 15 ہزار کے قریب مقدمات کے فیصلے ہوئے۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائی کورٹ کی پرنسپل سیٹ اور تمام علاقائی بنچز میں عدالتی کارروائی معمول کے مطابق جاری رہی۔ لاہور ہائی کورٹ پرنسپل سیٹ اور علاقائی بنچز پر کسی بھی کیس کو وکلاء کی ہڑتال کے باعث موخر نہ کیا گیا۔

َ تمام کیسز میں فریقین کے وکلاء عدالتوں میں پیش ہوئے اور ضابطہ کی کارروائی عمل میں لائی گئی۔ اعدادوشمار کے مطابق لاہور پرنسپل سیٹ پر362مقدمات کے فیصلے ہوئے، ہائی کورٹ ملتان میں 187، بہاولپورمیں 94 اور راولپنڈی بنچ پر19 مقدمات کے فیصلے کئے گئے۔

پنجاب کی ماتحت عدلیہ میں 11 ہزار772 نئے مقدمات دائر ہوئے۔ پنجاب کی ماتحت عدلیہ میں ایک دن میں 14 ہزار863 مقدمات کے فیصلے کئے گئے، صوبہ پنجاب کی کسی بھی ہائی کورٹ بار کی جانب سے ہڑتال کی کال نہیں دی گئی۔

صوبہ پنجاب میں ضلعی و تحصیل بار ایسو سی ایشنز کی بہت بڑی اکثریت نے بھی آج ہڑتال کی کال نہیں دی۔ وکلاء نے عوامی مفاد میں عدالتوں میں پیش ہو کر ہڑتال کی کال کو بری طرح ناکام بنایا۔

پنجاب کے وکلاء نے ہمیشہ آئین کی بالادستی اور عدلیہ کی آزادی میں بے پناہ قربانیاں دی ہیں۔ پنجاب کے وکلاء نے ہڑتال کلچر کے خاتمے کیلئے عملی مظاہرہ کرکے ملک کی تاریخ میں ایک سنہرے باب کا اضافہ کیا۔

عدلیہ اور وکلاء کو آپس میں لڑوانے والے بری طرح ناکام ہونگے۔ عدلیہ اور بار کمزور کرنے کی ہر سازش کا وکلاء کے تعاون سے ڈٹ کر مقابلہ کیا جائے گا۔ ضلعی عدلیہ کے ججزبہترین کارکردگی کا مظاہرہ کررہے ہیں، اچھی کارکردگی کے حامل جوڈیشل افسران کو تعریفی اسناد دی جائیں گے۔

Leave a reply