پنجاب حکومت کا کسانوں کو معیاری زرعی ادویات کی کنٹرول ریٹ پر فراہمی کیلئے سہولت سینٹرز قائم کرنے کا فیصلہ۔

0
26

پاکستان ٹوڈے: ہر تحصیل میں کسان سہولت سینٹر 15 جون سے فعال ہوگا۔ چیف سیکرٹری پنجاب زاہد اختر زمان کی زیر صدارت کمشنرز، ڈپٹی کمشنرز کا ویڈیو لنک اجلاس۔

تفصیلات کے مطابق اجلاس میں کپاس کی کاشت کے اہداف، خسرہ کی صورتحال، ستھرا پنجاب پروگرام کا جائزہ ۔ بہاولپور، ملتان، ڈی جی خان کے کمشنرز کو کپاس کی فصل کی مکمل مانیٹرنگ کی ہدایت۔

ڈپٹی کمشنرز اگلے دو ماہ یوریا کھاد کی قیمتوں، طلب اور رسد پر کڑی نظر رکھیں۔ کھاد ڈیلروں سے سٹاک اور سیل کا ڈیٹا روزانہ کی بنیاد پر طلب کیا جائے۔ صحت اور تعلیم کے شعبوں کی بہتری حکومت کی ترجیح ہے۔

وزیر اعلیٰ پنجاب کی ہدایت پر صحت کے شعبے کو ڈپٹی کمشنرز کی کارکردگی کی جانچ کے اشاریوں میں شامل کیا گیا ہے ۔ چیف سیکرٹری کا عید سے قبل مویشیوں کے غیر قانونی سیل پوائنٹس کے خلاف کریک ڈاون کا حکم۔

کریک ڈاون کیلئے خصوصی سکواڈ تشکیل دیئے جائیں۔ محکمہ زراعت اور صحت کے سیکرٹریز نے اجلاس کو تفصیلی بریفنگ دی, صوبے میں 40 لاکھ ایکڑ پر کپاس کی کاشت کا ہدف مقرر کیا گیا ہے۔

اب تک 32 لاکھ ایکڑ پر کپاس کاشت کی جا چکی ہے۔ خسرہ کی روک تھام کیلئے محکمہ صحت نے تمام اضلاع کو ہدایات جاری کر دی ہیں۔ صوبہ میں اب تک خسرہ کے 3210 کنفرم کیسز، 22 اموات رپورٹ ہوئی ہیں۔ خسرہ کے309 مریض بچے ہسپتالوں میں زیر علاج ہیں۔

خسرہ سے متاثرہ علاقوں میں 19 میڈیکل کیمپس قائم، کلینک آن ویلز کو متحرک کیا گیا ہے۔ سیکرٹری بلدیات، تمام ڈویژنل کمشنرز اور ڈپٹی کمشنرز ویڈیو لنک کے ذریعے شریک ہوئے۔

Leave a reply